گولن تحریک کے خلاف تحقیقات کے سلسے میں بارتن کے صوبے میں دو اساتذہ کو بالترتیب سات سال نو ماہ تیئس دن اور سات سال چھ ماہ جیل کی سزا سنا دی گئی۔

حکومت تحریک پر پندرہ جولائی کی بغاوت کی کوشش کی منصوبہ بندی کا الزام عائد کرتی ہے اور اسے ایک دہشت گرد جماعت قرار دیتی ہے۔

حکومت کی جانب سے بند کر دیے جانے والے ایک اسکول کے سابق استاد ایس ایس پر متنازعہ موبائل ایپ بائی لاک استعمال کرنے کا الزام لگایا گیا جس کے متعلق حکومت سمجھتی ہے کہ یہ گولن کے پیروکاروں کے درمیان رابطے کا بڑا ذریعہ تھا۔ اسے اس لیے بھی تحریک سے جوڑا گیا کہ اس کا بنک اکونٹ بنک ایشیا میں تھا کیونکہ اسکول انتظامیہ نے اسے تنخواہ لیے بنک ایشیا میں اکاونٹ کھولنے کو کہا تھا۔ ایس ایس کو پچیس اپریل کو سات سال نو ماہ اور بایئس دن جیل کی سزا سنائی گئی۔

اس دوران  بارتن ہی کے ایک اور استاد ایم ای کو اسی دن دہشت گرد تنظیم کا رکن ہونے کے الزام میں سات سال اور چھ ماہ قید کی سزا سنائی گئی۔