انقرہ کی عدالت نے ان دو کمپنیوں کے پانچ افسران کی گرفتاری پر فیصلہ سنا دیا ہے جو حکومت کی جانب سے بند کیے جانے والے گولن تحریک سے منسلک اسکولوں کو خوراک اور تعمیراتی سامان فراہم کرتے تھے۔

گرفتار شدگان پر  مبینہ دہشت گرد تنظیم کی اعانت کا الزام عائد کیا گیا ہے کیونکہ حکومت نے 15 جولائی کو بغاوت کی کوشش کا الزام تحریک پر لگایا ہے۔

عدالت کی جانب سے اپنے فیصلے کی وجہ بینک ایشیا کی رسیدوں کو قرار دیا گیا ہے۔ یہ وہ اسلامی قرض دینے والا ادارہ تھا جسے حکومت نے تحریک کے خلاف کریک ڈاون کے دوران بند کر دیا تھا۔