حقوق انسانی کے وکیل کو بغاوت کے بعد کریک ڈاون میں بر خواستگی کے بعد عوامی عمارات میں داخلے سے روک دیا گیا

حقوق انسانی کے وکیل کو بغاوت کے بعد کریک ڈاون میں بر خواستگی کے بعد عوامی عمارات میں داخلے سے روک دیا گیا

ایک فزیشن، کالم نگار اور تنظیم برائے حقوق انسانی و حمایت مظلومین (مظلومدر) کے سابق سربراہ عمر فاروق گیرگیرلی اوغلو نے کہا ہے کہ حکومت نے انھیں کوجیلی میں واقع  سرکاری ہسپتال میں ملازمت سے برطرف کرنے کے بعد عوامی عمارات میں قدم رکھنے سے روک دیا ہے۔ گزشتہ ہفتے کے آر...