کوجیلی کی داریکا میونسپلٹی کے ایک بے باک نقاد ابراہیم اوزون نے بتایا کہ اسے بیمار والدہ کو ہسپتال لے جانے کے لیے ایمبولینس دینے سے اس لیے انکار کر دیا گیا کہ وہ مقامی انتظامیہ کے خلاف تنقید کرتا ہے۔

حکمران جسٹس اینڈ ڈویلپنٹ پاٹی (ٓاے کے پی) کے ٹکٹ پر داریکا کے میئر بننے والے شکرو کاراباجک نے اوزن سے کہا کے وہ ایک ایسے شخص کے لیے کچھ نہیں کرے گا جو سوشل میڈیا پر میونسپلٹی پر تنقید کرتا ہے۔

کاراباجک نے اوزون سے فون پر کہا :”ایک ایسے شخص کو جو اپنے ہی خدمت کرنے والوں پر نفرت سے تنقید کرتا ہے ۔۔۔۔۔۔ میں تمھیں کوئی پبلک سروس فراہم نہیں کر سکتا۔ دفع ہو جاو۔ ”

اوزون نے فیس بک پر واقع کی تفصیلات بیان کرتے ہوئے لکھا کہ ڈاکٹروں نے اس کی والدہ کو داریکا فارابی سٹیٹ ہسپتال سے کسی بہتر سہولیات کے حامل ہسپتال میں لے جانے کے لیے کہا تھا۔

“ہم انہیں اپنی کار میں نہیں لے جا سکتے تھے کیونکہ وہ ڈایلیسز پر ہیں اور ہڈیوں کی سنگین بیماریوں میں بھی مبتلا ہیں۔ ڈاکٹر انہیں زیادہ حرکت کی اجازت نہیں دیتے۔” اوزون نے کہا کے انہوں (اس کا والد اور وہ خود) نے براہ راست مئر کو فون کیا تاکہ وقت بچایا جا سکے۔

 

 

Related News